امریکی ریڈ لائن کو ایرانی جنگ کے خطرات کا سامنا

امریکی ریڈ لائن کو ایرانی جنگ کے خطرات کا سامنا

حملوں سے بچنے کے لئے عراق میں مغربی فوج کی تقرری اور سلیمانی کے آخری رسومات کے دوران مچی بھگدڑ میں درجنوں افراد ہلاک
بدھ, 8 January, 2020 - 15:15
          تہران نے گذشتہ جمعہ کو بغداد میں ہونے والے ایک فضائی حملہ کے دوران پاسداران انقلاب کے قدس فورسز کے کمانڈر قاسم سلیمانی کی ہلاکت کے پس منظر میں امریکہ کے خلاف انتقامی حملوں کا آغاز کرتے ہوئے دھمکیوں کی جنگ کو تیز کر دیا ہے۔
          ان دھمکیوں کے مقابلہ میں ایک مغربی اہلکار نے "الشرق الاوسط" کو بتایا ہے کہ واشنگٹن نے عرب اور یوروپی ثالثین کے توسط سے تہران کو ایک پیغام بھیجا ہے جس میں یہ انتباہ شامل ہے کہ اگر قاسم سلیمانی کے قتل کے جواب میں امریکی فوجی یا ریٹائرڈ افراد ایران یا اس کے ایجنٹوں کے ہاتھوں مارے گئے تو واشنگٹن فوری طور پر ایران میں اسٹریٹجک جگہوں پر بمباری کرکے اس کا جواب دے گا اور امریکی فوج نے ایک (بینک آف ٹارگٹس) کی ایک فہرست تیار کی ہے جس میں ایران کی درجنوں جگہیں شامل ہیں اور عہدیدار نے کہا کہ خطے میں امریکی مفادات کو نشانہ بنانے کی ایرانی دھمکیوں کا جواب ریڈ لائن ہوگا۔
          گذشتہ روز صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ایران کی طرف سے ہونے والے ہر ممکنہ ردعمل کا جواب دینے کے لئے امریکہ تیار ہے اور انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ ایران میں ثقافتی مقامات کو نشانہ بنانے کے معاملہ سے متعلق قانون کی پاسداری کرنے کے خواہش مند ہیں اور انہوں نے سلیمانی کے قتل کے اپنے فیصلے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کو ختم کئے جانے کی وجہ سے بہت سی جانیں بچ گئی ہیں۔(۔۔۔)
بدھ 013 جمادی الاول 1441 ہجرى - 08 جنوری 2020ء شماره نمبر [15016]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا