ایرانی اقتدار اور حزب اللہ کو ختم کرنے کے لبنانی اقدام معیشت کو بچانے کے منصوبے کی راہ میں رکاوٹ

ایرانی اقتدار اور حزب اللہ کو ختم کرنے کے لبنانی اقدام معیشت کو بچانے کے منصوبے کی راہ میں رکاوٹ

پیر, 2 March, 2020 - 13:15
"2020 قومی اقدام تحریک" کے آغاز کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے
لبنان میں متعدد سیاست دانوں اور کارکنوں نے لبنان سے ایرانی اقتدار کو ختم کرنے اور اسے معاشی اور مالی جہتوں کے ذریعہ موجودہ سیاسی بحران سے نکالنے کے لئے "2020 قومی اقدام تحریک" کا آغاز کیا ہے۔
اس اقدام کے افتتاح کے دوران سابق نائب فاریس سعید نے قومی وفاق کے معاہدہ اور آئین کی پابندی کرنے کا مطالبہ کیا ہے کیونکہ ان دونوں کو جو مرکزیت حاصل ہے کسی بھی امدادی اصلاح پسند تحریک کی مستقل مزاجی اور شہری امن کے تحفظ کے لئے کسی بھی بیرونی مداخلت سے نجات پانے کے لئے ان سے ناگزیر نہیں کیا جا سکتا ہے اور انہوں نے اس بات پر بھی زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ لبنان اپنے تمام لوگوں کے لئے ایک آخری وطن ہے اور اس کی شناخت اور وابستگی عربی ہے۔
یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب نائب حسن فضل اللہ کی زبانی حزب اللہ نے ان کی اس بات کو مسترد کردیا ہے کہ لبنان پر بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کی سرپرستی ہے اور اس تناظر میں حزب اختلاف سے وابستہ ایک اہم سیاسی ذمہ دار نے اس بات پر زور دیا ہے کہ لبنان کی حکومت کے ذریعہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے ساتھ ہونے والے تعاون سے مالی اور معاشی بحرانوں پر قابو پایا جا سکتا ہے اور اس سے لبنان کے مالی اور معاشی بحران کو ختم کیا جا سکتا ہے۔(۔۔۔)
پیر 07 رجب المرجب 1441 ہجرى - 02 مارچ 2020ء شماره نمبر [15070]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا