روسی اور ترکی کشیدگی میں امریکہ میدانی طور پر داخل

روسی اور ترکی کشیدگی میں امریکہ میدانی طور پر داخل

بدھ, 4 March, 2020 - 11:30
اقوام متحدہ میں امریکی خاتون مندوب کیلی کرافٹ کو ترکی کی سرحد سے لگے شامی علاقوں کا دورہ کرنے کے دوران دیکھا جا سکتا ہے (اپوزیشن کے علاقوں میں شامی شہری دفاع)
گزشتہ روز واشنگٹن شام کے ادلب گورنریٹ میں ماسکو اور انقرہ کے مابین ہونے والی کشیدگی کے علاقے میں داخل ہو چکا ہے اور اس مقصد سے امریکی حکام نے گزشتہ روز شام اور ترکی کی سرحد پر واقع باب الہوی گزرگاہ کا دورہ کیا ہے۔
شام کے لئے امریکہ کے خصوصی مندوب  جیمز جیفری نے کہا ہے کہ ان کا ملک ترکی کو ادلب میں گولہ بارود اور انسانی امداد فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔
جیفری نے مزید کہا کہ ترکی نیٹو میں شراکت دار ہے اور زیادہ تر فوج امریکی مشین استعمال کرتی ہے اور ہم اس بات کو یقینی بنانے کی کوشش کریں گے کہ مشینیں تیار ہیں اور قابل استعمال بھی ہیں۔
اسی سلسلہ میں انقرہ میں امریکی سفیر ڈیوڈ سیٹر فیلڈ نے کہا ہے کہ واشنگٹن فضائی دفاعی نظام کی حصولیابی کے سلسلہ میں انقرہ کی طرف سے پیش کردہ درخواست پر غور کر رہا ہے اور باد رہے کہ اقوام متحدہ میں امریکی خاتون مندوب کیلی کرافٹ جیفری اور سیٹر فیلڈ کے ہمراہ ترکی کی سرحد سے لگے شامی علاقوں کا دورہ کرنے گئے ہیں۔(۔۔۔)
بدھ 09 رجب المرجب 1441 ہجرى - 04 مارچ 2020ء شماره نمبر [15072]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا