حوثی عدالت کی طرف سے 35 پارلیمنٹیرینز کو سزائے موت کا فیصلہ

حوثی عدالت کی طرف سے 35 پارلیمنٹیرینز کو سزائے موت کا فیصلہ

بدھ, 4 March, 2020 - 11:45
گزشتہ نومبر میں المخا نامی علاقہ میں حوثیوں کی جارحیت کے اثرات کو دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
گزشتہ روز باغی حوثی ملیشیاؤں کے کنٹرول میں ایک عدالت نے قانون کی حمایت کرنے والے اتحاد کے ساتھ مخبری کرنے کے الزام میں پارلیمنٹ کے ان 35 ممبروں کے خلاف سزائے موت دی ہے جو قانونی یمنی حکومت کی حمایت میں ہیں۔
جن لوگوں کے حلاف سزا سنائی گئی ہے یمن کے اندر اور باہر ان کے منتقل شدہ اور غیر منقولہ جائدادوں کو بین الاقوامی طور پر غیر تسلیم شدہ بغاوت کی حکومت کے حق میں ضبط کرنا بھی اس فیصلہ کے متن میں شامل ہے۔
جن اراکین پارلیمنٹ کے خلاف فیصلہ سنایا گیا ہے ان میں سے رکن پارلیمنٹ اور وزیر مملکت برائے پارلیمنٹ اور شورائی امور کے عہدہ پر فائز محمد مقبل الحميری نے کہا یہ فیصلہ میرے لئے شرف اور اعزاز کا تمغہ ہے اور اس بات کی تصدیق ہے کہ ہم نے ان کو تکلیف دی ہے اور ان کے منصوبے کو ناکام کرنے اور اس نسل پرست اور مخالف تحریک کی مزاحمت کرنے میں اپنا کردار ادا کیا ہے جو عرب اور اسلام مخالف پارسی منصوبے سے وابستہ ہے۔(۔۔۔)
بدھ 09 رجب المرجب 1441 ہجرى - 04 مارچ 2020ء شماره نمبر [15072]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا