حوثی جماعت کے ذریعہ زکوۃ کے محصول کا بے جا استعمال

حوثی جماعت کے ذریعہ زکوۃ کے محصول کا بے جا استعمال

ہفتہ, 14 March, 2020 - 16:00
صنعا کے وسط میں پرانے شہر کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (IBA)
صنعا کے معاشی ذرائع نے حوثی جماعت کے ماتحت علاقوں میں ان کے سلوک کو بہت غلط بتایا ہے اور خاص طور پر زکوۃ کے محصول سے متعلق جو ان کا رویہ ہے کیونکہ یہ باغی جماعت ان محصول کے ذریعہ جنگی کوششوں میں اضافہ کررہی ہے اور اسی نئی بھرتیاں بھی کررہی ہے۔
اس جماعت کا یہ دعوہ ہے کہ وہ اپنے کنٹرول والے علاقوں میں غریبوں کو زکوۃ فنڈ بانٹ رہی ہے لیکن صنعا اور دیگر علاقوں کے رہائشیوں کی گواہی اس جماعت کے دعوؤں کی تردید کر رہی ہے اور اس بات کی تصدیق کررہی ہے کہ جن لوگوں کے درمیان فنڈز بانٹے جاتے ہیں وہ زیادہ تر ملیشیاؤں کے اہلکار اور وفادار ہوتے ہیں۔
الشرق الاوسط کو صنعاء کے باخبر ذرائع نے بتایا ہے کہ حوثی لوگ بین الاقوامی تنظیموں کے کاموں پر مزید پابندیاں لگانے کے سلسلہ میں سوچ رہے ہیں جبکہ بین الاقوامی خطرہ یہ سامنے آیا ہے کہ ان کے کنٹرول والے علاقوں میں انسانی امداد کو کم کیا گیا ہے اور امدادی پروگراموں میں بھی کمی آئی ہے۔(۔۔۔)
ہفتہ 19 رجب المرجب 1441 ہجرى - 14 مارچ 2020ء شماره نمبر [15082]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا