سفید جزائر افسردگی کے گزرتے بادلوں کے درمیان پر امید ہے

سفید جزائر افسردگی کے گزرتے بادلوں کے درمیان پر امید ہے

ہفتہ, 4 April, 2020 - 10:15
جزوی کرفیو نافذ ہونے کے بعد جزائر کی ایک سڑک کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
جنگوں اور پرتشدد محاذ آرائیوں کی تاریخ کے طویل تجربے کی بنا پر سفید جزائر معروف ومشہور ہے کہ موجودہ دشمن بالکل نیا ہے اور اسے پرانی نوآبادیاتی فوج سے کوئی وراثت حاصل نہیں ہے اور یہ نئے نسلی اعداد وشمار کے تابع بھی نہیں ہے اور نہ ہی اس کا ڈیٹا بیس یا ڈی این اے کا  کوئی کوڈ ہے۔
سفید جزائر اب اس انتہائی بے چینی کے باوجود جو کورونا وائرس کے پھیلنے سے سامنے آیا ہے بالکل خالی ہے لیکن یہ پر امید بھی ہے کیونکہ اس کی فضاء اور وہاں کا ماحول درمیانہ ہے اور اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ غمزدہ بادل منڈلا رہے ہیں اور وہ وہاں کی سڑکوں، چوکوں اور کیفے، میدانوں کو خالی دیکھ رہے ہیں اور اس کی خوبصورتی میں مشہور بندرگاہ ویران ہے، ہاں بالکل ویران ہے اور کشتیاں اور بحری جہازیں نیلے پانی کی سطح پر ٹھہری ہوئی ہیں۔(۔۔۔)
ہفتہ 11 شعبان المعظم 1441 ہجرى - 04 اپریل 2020ء شماره نمبر [15103]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا