"بھوک مظاہرے" نے دیاب حکومت کو گھیرا

"بھوک مظاہرے" نے دیاب حکومت کو گھیرا

بدھ, 29 April, 2020 - 12:30
گزشتہ روز لبنان کے ایک شہری دفاعی اہلکار کو شہر طرابلس کے ایک بینک میں مظاہرین کی طرف سے لگائی گئی آگ کو بجھاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے پی)
لبنان کے ایک سے زیادہ خطوں میں ہونے والے والے "بھوک مظاہرے" نے صدر حسان دیاب کی حکومت کا محاصرہ کیا ہے اور ان مظاہروں کے دوران بیروت اور شمال میں سڑکوں کو بلاک کیا گیا ہے اور بینک کی شاخوں کو نذر آتش بھی کیا گیا ہے اور فوج کے ساتھ براہ راست محاذ آرائی کا منظر بھی دیکھنے کو ملا ہے جس کی وجہ سے ملک میں سیکیورٹی صورتحال کے بگڑنے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔
پرسو رات کے دوران فوج کے ساتھ ہونے والی محاذ آرائی میں مرنے والے نوجوان فواز السمان کی آخری رسومات کے بعد گزشتہ روز طرابلس میں جھڑپیں ایک بار پھر شروع ہو گئی ہیں اور اس شہر میں عوامی تحریکیں بھی دیکھنے میں آئی ہیں اور اسی طرح فوج نے انھیں منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس فائر کی ہے کیونکہ مظاہرین نے بینک کی چند شاخوں کو نذر آتش کر دیا ہے اور ان میں سے کچھ نے جان بوجھ کر فوج پر پتھراؤ بھی کیا ہے۔(۔۔۔)
بدھ 06 رمضان المبارک 1441 ہجرى - 29 اپریل 2020ء شماره نمبر [15128]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا