"دوسری لہر" دنیا کا جنون اور مزید دو سال کی علیحدگی کا خدشہ

"دوسری لہر" دنیا کا جنون اور مزید دو سال کی علیحدگی کا خدشہ

ہفتہ, 2 May, 2020 - 09:30
گزشتہ روز مغربی کنارہ کے الخلیل علاقہ میں واقع قزازین مسجد کے باہر فلسطینیوں کو نماز جمعہ "کورونا" کے سبب الگ الگ ادا کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
"کورونا" وبا کی دوسری لہر کے پھیلاؤ کا جنون دنیا پر ایسے وقت میں غلبہ حاصل کرتا جا رہا ہے جب متعدد ممالک نے انسانیت کے آدھے حصے کو الگ تھلگ کرنے والے سخت کورنٹائن کے اقدامات کو کم کرنے کے لئے تدریجی منصوبے پر عمل درآمد کرنا شروع کردیا ہے اور خود عالمی رہنماؤں کو کو ایک بے مثال صورتحال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس کی وجہ سے سخت حفاظتی اقدامات نافذ کرنے کی ضرورت پڑ سکتی ہے اور آئندہ ہفتوں کے دوران مختلف سطحوں پر معاشی شعبوں کی بحالی کے سلسلہ میں اقدامات بھی ہو سکتے ہیں۔
ایک امریکی تحقیق میں توقع کی گئی ہے کہ "کوویڈ ۔19" وبا کا پھیلاؤ 18 ماہ اور دو سال کے درمیان طویل عرصے تک جاری رہے گا اور اسی وجہ سے تنہائی کے اقدامات جاری رہیں گے اور دنیا کی دو تہائی آبادی کی ترقی کے بغیر اس پر قابو پایا جا سکے گا۔(۔۔۔)

ہفتہ 09 رمضان المبارک 1441 ہجرى - 02 مئی 2020ء شماره نمبر [15131]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا