"ڈیٹا وار" کے بعد دمشق کی بے چینی میں اضافہ

"ڈیٹا وار" کے بعد دمشق کی بے چینی میں اضافہ

منگل, 19 May, 2020 - 11:45
گزشتہ روز ادلب کے دیہی علاقوں میں مخالف پارٹی فیلق الشام اور شامی حکومت کی افواج کے مابین قیدیوں کا تبادلہ ہوا (اے ایف پی)
نیویارک: علي بردى دمشق: «الشرق الاوسط»
دمشق میں پریشانی کا ماحول اس وقت دیکھنے کو ملا جب تاجر رامی مخلوف اور ان کے اور حکومت کمیونی کیشنز کارپوریشن کے درمیان "ڈیٹا جنگ" کے تبادلے کے سلسلہ میں ایک معاملہ سامنے آیا کیونکہ ان کی کمپنی سیریٹیئل کی طرف سے بیت المال کے رقوم کی ادائیگی کا معاملہ پھنسا ہوا تھا۔

صدر بشار الاسد کے کزن نے اتوار کے روز نشر ہونے والے ایک ویڈیو کلپ میں شام کی معیشت اور دیگر چیزوں کے زوال کے سلسلہ میں آگاہ کیا تھا کہ اگر سیریٹیئل کو نقصان پہنچا اور وہ نزاع کا موضوع بنا اور گزشتہ اس کشیدگی میں اضافہ اس وقت ہوا جب انہوں نے اپنے فیس بک پر ایک دستاویز نشر کیا اور اس میں کمیونیکیشن اتھارٹی کی باتوں کو وضاحت کے ساتھ جھوٹا ٹھہرایا کہ کمیشن نے عوامی خزانے کو رقم ادا کرنے سے انکار کیا ہے۔(۔۔۔)


منگل 26 رمضان المبارک 1441 ہجرى - 19 مئی 2020ء شماره نمبر [15148]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا