کاظمی کے ساتھ ایران کی جنگ بندی کے خاتمہ کے اشارے

کاظمی کے ساتھ ایران کی جنگ بندی کے خاتمہ کے اشارے

پیر, 25 May, 2020 - 19:30
عراق میں ایران کی ملیشیاؤں نے پچھلے کچھ دنوں میں ریاست کے عمومی ڈھانچے اور اس کے قوانین کی خلاف ورزی کرنا شروع کر دیا ہے اور مصطفی الکاظمی کو وزیر اعظم کے طور پر قبول کرنے کے معاہدہ کے بعد  عراقی سرزمین پر واشنگٹن اور تہران کے مابین ہونے والے سمجھوتہ کا خاتمہ کر دیا ہے۔

19 مئی کو مسلح ایران نواز دھڑوں نے بغداد کے گرین زون میں کٹیوشا راکٹ داغے ہیں اور اس کے بعد ان دھڑوں کے ماننے والوں نے سعودی عرب کے سامنے الکاظمی کو شرمندہ کرنے کی واضح کوشش میں ایم بی سی چینل کے اسٹوڈیو پر بھی دھاوا بولا ہے اور اس کے علاوہ الکاظمی کے مندوب وزیر خزانہ علی عبد الامیر علاوی کے ریاض دورہ کے بعد سعودی عرب کے خلاف ایرانی دھڑوں کی "الیکٹرانک فوج" کی طرف سے شروع کی جانے والی معاندانہ مہم بھی شامل ہے۔
 
پیر 02 شوال المکرم 1441 ہجرى - 25 مئی 2020ء شماره نمبر [15154]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا