دونوں امریکہ بنا "کورونا" کا سنٹر اور عالمی سطح پر 400 ہزار افراد کی موت

دونوں امریکہ بنا "کورونا" کا سنٹر اور عالمی سطح پر 400 ہزار افراد کی موت

ہفتہ, 6 June, 2020 - 12:15
کل مسجد نبوی میں معاشرتی فاصلے کو مدنظر رکھتے ہوئے جمعہ کی نماز ادا کرتے ہوئے نمازیوں کو دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
ایسے وقت میں جب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے زور دے کر کہا ہے کہ ان کے ملک میں "کوویڈ ۔19" کے بحران پر قابو پالیا ہے عالمی ادارۂ صحت نے خبردار کیا ہے کہ امریکہ اب بھی اس وبائی بیماری کا مرکز ہے جس نے دنیا بھر میں 400 ہزار افراد کو ہلاک کردیا ہے۔

امریکہ میں مئی کے مہینے میں بے روزگاری کی شرح میں اچانک کمی پر تبصرہ کرتے ہوئے ٹرمپ نے کہا ہے کہ اس طاقت نے ہمیں اس خوفناک وبائی بیماری پر قابو پانے کی اجازت دی ہے اور ہم نے بڑے پیمانے پر اس پر قابو پا لیا ہے۔


اس کے برعکس ڈبلیو ایچ او کے ترجمان مارگریٹ ہیریس نے کہا ہے کہ اس وبا کا مرکز اس وقت وسطی، جنوبی اور شمالی امریکہ ہے اور خاص طور پر امریکہ اس کا مرکز بنا ہوا ہے اور انہوں نے یہ بھی بتایا کہ کچھ ممالک میں تنہائی کی پابندیوں میں نرمی ہونے کے بعد "کورونا" وائرس کے انفیکشن کی صورتوں میں معمولی اضافے کا مشاہدہ کیا جا رہا ہے اور انہوں نے یہ بھی یاد دلایا کہ لوگوں کو اپنی حفاظت جاری رکھنی چاہئے۔(۔۔۔)


ہفتہ 14 شوال المکرم 1441 ہجرى - 06 جون 2020ء شماره نمبر [15166]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا