عراق میں ترکی پر کی جانے والی امریکی تنقید کی وجہ سے انقرہ مشتعل

عراق میں ترکی پر کی جانے والی امریکی تنقید کی وجہ سے انقرہ مشتعل

پیر, 22 June, 2020 - 13:30
ترکی کے وزیر دفاع خلوصي اکار کو گزشتہ جمعہ کے دن عراق کی سرحد کے قریب واقع ایک فوجی زون کا معائنہ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے پی)
ترکی نے شمالی عراق کے کردستان کے علاقے میں اس کی افواج کے ذریعہ کیے جانے والے "پنجے ایگل" اور " پنجے شیر" نامی آپریشن کے خلاف بین الاقوامی مذہبی آزادی کی امریکی کمیٹی کی طرف سے ہونے والی مذمت اور تنقید کو مسترد کیا ہے اور خاص طور پر یزیدیوں اور عیسائیوں پر ہونے والی خلاف ورزیوں اور حملوں کی بہت کو بھی غلط قرار دیا ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان حامي اكصوي نے گزشتہ روز اتوار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکہ بھی "پی کے کے" کو ایک دہشت گرد تنظیم کے طور پر درجہ بندی کرتا ہے لیکن دنیا میں مذہب کی آزادی کے دفاع کا دعوی کرنے والی کمیٹی عراق اور شام میں تنظیم کی ان سرگرمیوں سے آنکھیں بند کرلیتی ہے جو کرد عوامی تحفظ یونٹ کردوں سمیت مقامی آبادی کے خلاف ظلم وستم کرتی ہے اور دھمکی دینے کے طریقوں کا استعمال کرتی ہے اور علیحدگی کی پالیسی کو اختیار کرتی ہے۔(۔۔۔)


پیر 01 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 22 جون 2020ء شماره نمبر [15182]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا