الکاظمی نے عراق میں غیر ملکی مہم جوئیوں کو روکنے کے عزم کا کیا اظہار

الکاظمی نے عراق میں غیر ملکی مہم جوئیوں کو روکنے کے عزم کا کیا اظہار

جمعہ, 26 June, 2020 - 13:45
مصطفیٰ الکاظمی کو دیکھا جا سکتا ہے (اے پی)
عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی نے اپنے ملک میں غیر ملکی مداخلت اور مہم جوئیوں کو روکنے کے لئے اپنے عزم وارادہ کا اظہار کیا ہے اور اسی طرح انہوں نے اپنے عزم وارادہ کے سلسلہ میں اس بات کی بھی تصدیق کی ہے کہ ان کی حکومت فرقہ واریت سے لڑے گی اور ضرورت پڑنے پر اسے جرائم بھی قرار دےگی۔


الکاظمی نے کل جمعرات کے دن عراقی میڈیا کے پیشہ ور افراد کے ایک گروپ کے ساتھ جس میں "الشرق الاو سط" بھی ہے ان سے ملاقات کرنے کے دوران اعلان کیا ہے کہ سرحدی گزرگاہوں پر دوبارہ قابو پانے کے مقصد سے کہ ایک مہم کا آغاز کیا جائے گا اور  اسی وقت اس بات پر بھی زور دیا ہے کہ وہ اس بیرونی مداخلت کی اجازت نہیں دیں گے جس سے قومی اتحاد اور عراقی معاشرے کے تانے بانے کو خطرہ لاحق ہو سکے اور انہوں نے مزید کہا کہ عراق کا مستقبل اہم ہے۔۔۔ اور اس لئے ہم کسی بھی پارٹی کے ذریعہ عراقی سرزمین پر کسی مہم جوئی کی اجازت نہیں دیں گے۔


الکاظمی نے اس بات کا بھی انکشاف کیا ہے کہ مسلح گروہوں اور ڈاکوؤں کے ذریعہ عراق کے متعدد بارڈر کراسنگ پر ہونے والے کنٹرول کی وجہ سے اسے جو نقصان ہوا ہے اس سے اس ملک کو 3 سے 4 ارب ڈالر کے نقصان برداشت کرنا پڑے گا۔(۔۔۔)


جمعہ 05 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 26 جون 2020ء شماره نمبر [15186]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا