ایران کے دھڑوں کی طرف سے افراتفری کی دھمکی اور بغداد میں خوف وہراس کا ماحول

ایران کے دھڑوں کی طرف سے افراتفری کی دھمکی اور بغداد میں خوف وہراس کا ماحول

اتوار, 28 June, 2020 - 10:00
جب سے انسداد دہشت گردی فورسز نے ایران نواز "حزب اللہ بریگیڈ" کے صدر دفتر پر چھاپہ مارا اور ان 14 عناصر کو گرفتار کیا ہے جن میں ایک ایرانی بھی شامل ہے بغداد میں تناؤ کا ماحول جاری ہے اور اس ایرانی شخص کے بارے میں ذرائع کا کہنا ہے کہ وہ میزائل کے بنانے کا ماہر ہے اور صورتحال مزید اس وقت بگر گئیجب ایک اور دھڑے کے رہنما نے انتشار کی دھمکی دے دی ہے۔

مبصرین کی طرف سے بغداد کے اندر آنے والے دنوں میں حکومت کی حمایت کرنے والی حکومت اور اس کی حمایت کرنے والی فوجوں اور مسلح دھڑوں اور "کاتھیشا خلیوں" کے مابین تنازعہ کے پھیل جانے کے امکانات کا رجحان ہے اور خاص طور پر جب ان دنوں گفتگو لہجہ میں سخت رویہ سامنے آیا ہے جو ان دنوں الکاظمی حکومت کے خلاف نام نہاد "مزاحمت کے محور" کے ذریعہ چل رہی ہے یہاں تک کہ عصائب اهل الحق جماعت کے سیکرٹری جنرل قيس الخزعلي نے وزیر اعظم سے امریکی اور مغربی مفادات پر ہونے والے بم دھماکے کی عوامی طور پر پہلوتہی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔(۔۔۔)


اتوار 07 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 28 جون 2020ء شماره نمبر [15188]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا