السراج اور کونٹے: لیبیا میں کوئی فوجی حل نہیں ہے

السراج اور کونٹے: لیبیا میں کوئی فوجی حل نہیں ہے

اتوار, 28 June, 2020 - 18:45
اطالوی وزیر اعظم جوسپی کونٹے کو روم میں صدارتی کونسل کے صدر فائز السراج کا استقبال کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
گزشتہ روز طرابلس کی "الوفاق" حکومت کے وزیر اعظم اور اٹلی کے وزیر اعظم جوسیپ کونٹے نے روم میں اپنے اجلاس کے دوران لیبیا بحران کے حل کے لئے سیاسی راستے پر زور دیا ہے اور دوبارہ اس بات کی تصدیق کی ہے کہ لیبیا کے بحران کا حل فوجی نہیں ہو سکتا ہے۔

السراج کے دفتر سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق دونوں فریقوں نے لیبیا میں اپنی سرگرمیاں دوبارہ شروع کرنے کے مقصد سے اطالوی کمپنیوں کی واپسی کی دیکھ بھال کرنے کے لئے ایک کمیٹی بنانے پر اتفاق کیا ہے اور اس بات کی بھی تاکید کی ہے کہ کچھ دن پہلے شروع ہونے والی بارود نکالنے کی کاروائی میں اٹلی کی مستقل شراکت باقی رہے گی۔


یہ بات اس وقت سامنے آئی جب "نیشنل آرمی" کے ایک سینئر فوجی عہدے دار نے الشرق الاوسط سے گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ فیلڈ مارشل خلیفہ حفتر کی زیرقیادت قومی فوج کی افواج اور "الوفاق" حکومت کے وفادار ملیشیاؤں کے مابین ساحلی شہر سرت پر قابو پانے کی روک تھام کے لئے بین الاقوامی اور علاقائی کوششیں ہو رہی ہیں۔(۔۔۔)


اتوار 07 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 28 جون 2020ء شماره نمبر [15188]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا