گانٹز کی طرف سے ضم کرنے کے معاملہ کو ملتوی کرنے کے اشارے

گانٹز کی طرف سے ضم کرنے کے معاملہ کو ملتوی کرنے کے اشارے

منگل, 30 June, 2020 - 15:00
اسرائیلی فورسز کو فروری میں العروب کیمپ سے ایک نوجوان کو گرفتار کرنے کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (وفا)
وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو کی حکومت کے مرکزی پارٹنر بینی گانٹز کے ذریعہ گزشتہ روز امن عمل کے لئے امریکی ٹیم سے ملاقات کے دوران اپنے اس بیان کو لیک کرنے کے بعد جس میں انہوں نے کہا تھا کہ پہلی جولائی اسرائیل کی طرف سے مغربی کنارے کو ضم کرنے کے سلسلہ میں اعلان کرنے کی مقدس تاریخ نہیں ہے اور نیتن یاہو نے سمجھا کہ یہ بیان اشارہ ہے کہ وابستگی ملتوی کردی جائے گی؛ لہذا انہوں نے اس کے نتیجے میں اعلان کیا کہ "كحول لفان" پارٹی نے وابستگی کے معاملے پر فیصلہ نہیں کیا ہے۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ گانٹز نے یہ باتیں امریکی سفیر ڈیوڈ فریڈمین اور وہائٹ ​​ہاؤس کے مشیر ایو برکویٹز کے ساتھ ملاقات کے دوران نتن یاہو سے وابستگی کے منصوبے پر عمل درآمد کے لئے تیار ہونے سے 48 گھنٹے قبل کی ہے ۔


ان بیانات سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پیش کردہ امن منصوبے پر متفقہ اسرائیلی موقف کے وجود پر شکوک وشبہات پیدا ہوگئے ہیں اور کابینہ کے اجلاس کے دوران نیتن یاہو اور گانٹز کے درمیان ایک براہ راست پروگرام پر ہی جھگڑا ہو گیا تھا۔(۔۔۔)


منگل 09 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 30 جون 2020ء شماره نمبر [15190]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا