یمن: "صافر" کے سلسلہ میں بین الاقوامی اجلاس کا اہتمام کرنے کے لئے جرمنی اور برطانوی مذاکرات

یمن: "صافر" کے سلسلہ میں بین الاقوامی اجلاس کا اہتمام کرنے کے لئے جرمنی اور برطانوی مذاکرات

اتوار, 5 July, 2020 - 17:30
"صافر" نامی آئل ٹینکر کو دیکھا جا سکتا ہے (گیٹی امیجز)
نیویارک میں سفارت کاروں نے تجویز پیش کی ہے کہ سلامتی کونسل یمن میں راس عیسی کی بندرگاہ پر لنگر انداز ہونے والے ٹینکر "صافر" سے تیل چھڑکنے کے خطرے پر بات کرنے کے لئے بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ یمنی حکومت کی درخواست کو پورا کرے تاکہ اقوام متحدہ کے ماہرین کو اس بات کی اجازت دینے کے لئے ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیاؤں پر دباؤ ڈالا جا سکے کہ وہ بڑے پیمانے پر ماحولیاتی تباہی سے قبل تباہ شدہ جہاز کا معائنہ کر سکیں۔

برطانیہ نے رواں ماہ کے لئے سلامتی کونسل کے صدر جرمنی کے مندوب کرسٹوف ہیوسیگن کی درخواست جمع کرائی ہے جبکہ اس سے قبل اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس اور یمن کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفتھ کی طرف سے بین الاقوامی اداروں کو بار بار درخواستیں پیش کی گئی ہیں تاکہ اس ٹینکر کا حل تلاش کیا جا سکے جو ٹائم بم کے قائم مقام بن گیا ہے اور اس سے سمندری زندگی اور خطے کے ہمسایہ ممالک کو خطرہ لاحق ہے۔(۔۔۔)


اتوار 14 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 05 جولائی 2020ء شماره نمبر [15195]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا