"آکسفورڈ ویکسین" کے سلسلہ میں پرامید نتائج

"آکسفورڈ ویکسین" کے سلسلہ میں پرامید نتائج

منگل, 21 July, 2020 - 11:30
ایک فارماسسٹ کو تہران میں اس شخص سے گفتگو کرنے کے دوران دیکھا جا سکتا ہے جو ایران میں "کورونا" وبا کے شدید بحران کے درمیان واشنگٹن کی پابندیوں کے بارے میں شکایت کر رہا ہے (اے پی اے)
کل پیر کے دن برطانیہ سے مثبت خبریں آئی ہیں جن سے معلوم ہو رہا ہے کہ آکسفورڈ یونیورسٹی کے ذریعہ اعلان ہوتے ہی "کورونا" وائرس پر قابو پانے کا وقت قریب آچکا ہے کیوکہ اس وائرس کے خلاف ویکسین کے تجربات بہت امید افزاء ہیں جبکہ یہ بیماری دنیا میں جتنے لوگوں کو اپنا شکار بنایا ہے ان کی تعداد 60 ہزار سے تجاوز کر رہی ہے اور متاثرین کی تعداد 15 ملین کے قریب ہے۔

بی بی سی نے ویکسین تیار کرنے والوں کے بارے میں بتایا ہے کہ وہ لوگ محفوظ ہیں اور وائرس سے نمٹنے کے لئے مدافعتی نظام کی تربیت بھی کر رہے ہیں اور اس کے نتائج بہت امید افزاء ہیں لیکن ابھی یہ جاننا جلدی ہوگا کہ آیا یہ اس کے وسیع استعمال کے لئے کافی ہیں یا نہیں اور اسی طرح برطانوی سینائرجن کمپنی نے اعلان کیا ہے کہ "SNG001" نامی دوائی پر کیے جانے والے ٹیسٹوں کے ابتدائی نتائج سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ اس سے غیر معمولی انداز میں انفیکشن کے امکانات میں 79 فیصد کمی واقع ہوتی ہے۔(۔۔۔)


منگل 30 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 21 جولائی 2020ء شماره نمبر [15211]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا