ایرانی جہاز کے راستے اور اس کے ساز وسامان کے سلسلہ میں امریکی شکوک وشبہات

ایرانی جہاز کے راستے اور اس کے ساز وسامان کے سلسلہ میں امریکی شکوک وشبہات

ہفتہ, 25 July, 2020 - 10:15
جمعرات اور جمعہ کی شام میں رات گئے ایرانی شہری طیارے کے اندر مسافر اور آکسیجن آلات کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
واشنگٹن: معاذ العمری - تہران - بیروت «الشرق الاوسط»
مغربی سفارتی ذرائع نے شامی، عراقی اور اردنی سرحدوں پر واقع امریکی التنف اڈہ پر ایرانی مہان جہاز کے گزرنے کی وجوہات پوچھتے ہوئے  سوالات اٹھائے ہیں اور انہوں نے  ایرانی "پاسداران انقلاب" کے زیر استعمال جہاز میں موجود ساز وسامان کے بارے میں بھی سوالات اٹھائے ہیں اور یہ جہاز "پاسداران انقلاب" کے پاس سے شام اور لبنان میں تہران کی ملیشیاؤں کو فوجی سامان پہنچانے کی وجہ سے امریکی اور بین الاقوامی پابندیوں کی فہرست میں شامل ہے۔

ذرائع نے یہ بھی واضح کیا کہ عام طور پر سول جہاز فرات اور التنف بیس کے مشرق میں فضائی حدود کے راستے پر نہیں چلتا ہے کیونکہ یہ امریکی زیرقیادت "داعش" کے خلاف بین الاقوامی اتحاد کی فوجی کارروائیوں کے ساتھ مشروط ہے اور اسی وجہ سے خطے میں ایرانی طیارے کے اڑان اور اس کے سامان کے بارے میں شکوک و شبہات پیدا  ہوئے ہیں۔(۔۔۔)


ہفتہ 04 ذی الحجہ 1441 ہجرى - 25 جولائی 2020ء شماره نمبر [15215]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا