ناراض بیروت میں سولی دینے کے اشارے اور جھڑپیں اور استعفی دینے کا سلسلہ شروع

ناراض بیروت میں سولی دینے کے اشارے اور جھڑپیں اور استعفی دینے کا سلسلہ شروع

اتوار, 9 August, 2020 - 11:15
گزشتہ روز وسطی بیروت میں مظاہرین کے ذریعہ وہمی پھانسی کے مناظر کو دیکھا جا سکتا ہے (ای پی اے) اور "یوم حساب" کے مظاہرین اور سیکیورٹی فورسز کے درمیان جھڑپوں کے مناظر کو بھی دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
لبنانی دارالحکومت بیروت میں دوبارہ غصہ اور ناراضگی کا ماحول پیدا ہو گیا ہے اور شہید اسکوائر میں پھانسی کے پھندے کو لہرایا گیا ہے جس سے اس بندرگاہ دھماکے کے ذمہ داروں سے انتقام لینے کی طرف اشارہ کیا گیا ہے جس میں 158 شخص ہلاک اور 6 ہزار افراد زخمی ہوئے ہیں اور دھماکہ کے آس پاس کے علاقوں میں مکانات اور محلوں کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔

گزشتہ روز بیروت کی سڑکوں پر سیکیورٹی فورسز اور مشتعل مظاہرین کے مابین جھڑپیں شروع ہو گئیں ہیں جس کے دوران ایک پولیس اہلکار ہلاک ہو گیا ہے اور انٹرنل سیکیورٹی فورسز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کی موت کئی افراد کی طرف سے ہونے والے حملہ کے بعد ہوا ہے جبکہ ریڈ صلیب نے دونوں جانب سے 55 افراد کو ہاسپٹل منتقل کرنے اور میدان میں 117 افراد کے علاج کرنے کی بات کی ہے۔(۔۔۔)


اتوار 19 ذی الحجہ 1441 ہجرى - 09 اگست 2020ء شماره نمبر [15230]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا