دمشق میں "کورونا" اور اسپتالوں کی وجہ سے دہشت کا ماحول

دمشق میں "کورونا" اور اسپتالوں کی وجہ سے دہشت کا ماحول

اتوار, 9 August, 2020 - 12:15
حلب میونسپلٹی کے ایک ملازم کو شہر کی ایک گلی کو سینیٹائز کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
شامی شہری کورونا کی وبا کی توسیع کی وجہ سے ڈر وخوف کی حالت میں زندگی گزار رہے ہیں کیونکہ دمشق اور اس کے گردونواح میں کورونا سے متاثرین کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے اور اس کے بالمقابل سرکاری اسپتالوں کا جائزہ لینے سے بھی خوف وہراس کی ایک کیفیت طاری ہو جاتی ہے کیونکہ حکومت صحت کے نظام کے خراب ہونے اور متاثرین کی درخواست کو قبول کرنے کے سلسلہ میں ناکام نظر آرہی ہے اور اسی وجہ سے ڈاکٹروں کو سوشل میڈیا کے ذریعے طبی مشاورت فراہم کرنے کی ترغیب دی گئی ہے۔

اب تک شام کی وزارت صحت نے 1،060 کیس اور 48 اموات ریکارڈ کی ہے لیکن دمشق کے رہائشی اشارہ کر رہے ہیں کہ متاثرین اور اموات کی تعداد سرکاری اعداد وشمار سے کہیں زیادہ ہے اور حالیہ دنوں میں ڈاکٹروں، کارکنوں اور میڈیا کے افراد نے متاثرین اور اموات کی تعداد میں نمایاں اضافے کے سلسلہ میں انٹرنیٹ پر انتباہی تبصرہ شائع کیا ہے۔(۔۔۔)


 اتوار 19 ذی الحجہ 1441 ہجرى - 09 اگست 2020ء شماره نمبر [15230]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا