روس ترکی اور شام کے کردوں کے مابین ثالثی کرے گا

روس ترکی اور شام کے کردوں کے مابین ثالثی کرے گا

جمعرات, 3 September, 2020 - 15:30
شام کے ایک کرد رہنما نے کہا ہے کہ ماسکو انقرہ اور "شامی ڈیموکریٹک کونسل" کے مابین ثالثی کا خواہاں ہے  اور یاد رہے کہ "شامی ڈیموکریٹک فورسز" کے سیاسی ونگ میں کرد "عوامی تحفظ یونٹ" کا غلبہ ہے اور مشرقی فرات کے حصے میں ان کا کنٹرول ہے۔

روسی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ شام کے لئے روسی صدر کے خصوصی ایلچی الیگزنڈر لاورینتیف اور نائب وزیر خارجہ سیرگی ورشین نے ماسکو میں نائب وزیر خارجہ سادات اونل کی سربراہی میں ترک وفد سے ملاقات کی ہے اور مشرقی فرات کے خطے کی صورتحال پر دھمکیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے تبادلۂ خیال کیا گیا ہے اور شامی عرب جمہوریہ کی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کو نقصان پہنچاننے والی دھمکیوں کو بھی نگاہ میں رکھا گیا ہے۔


دریں اثنا روس کے ماہرین نے کہا ہے کہ روسی وزیر خارجہ سیرگی لاوروف نے کچھ دن پہلے جان بوجھ کر "شامی ڈیموکریٹک کونسل" کے ایک وفد کی میزبانی کی ہے جس میں انقرہ اور واشنگٹن کو پیغامات دیئے گئے ہیں اور اس بیان میں کہا گیا ہے کہ روسی قیادت ترکی اور کرد کے درمیان تناؤ کو کم کرنے کی کوشش کررہی ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 15 محرم الحرام 1442 ہجرى - 03 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15255]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا