لبنان میں شیعہ جوڑی پابندیوں کے بعد مال سے جکڑے ہوئے ہیں

لبنان میں شیعہ جوڑی پابندیوں کے بعد مال سے جکڑے ہوئے ہیں

جمعرات, 10 September, 2020 - 15:15
سابق وزراء علی حسن خلیل (دائیں) اور یوسف فنيانوس کو دیکھا جا سکتا ہے (اے بی)
لبنان میں دو سابق وزراء علی حسن خلیل اور یوسف فنيانوس پر واشنگٹن کی طرف سے عائد پابندیوں نے "شیعہ جوڑی" ("امال موومنٹ" اور "حزب اللہ") کی اس پوزیشن کو سخت کردیا ہے جس میں وہ کسی شیعہ وزیر کو "فنانس" پورٹ فولیو کو برداشت کریں گے اور اس وزیر کے فرقہ کو کوئی بھی نقصان نہیں پہنچے گا اگرچہ کچھ ذرائع اس بات کی تصدیق کرتے ہیں کہ اس جوڑی کی اپنی پوزیشن پر ثابت قدمی کو امریکی پابندیوں کے براہ راست ردعمل کے طور پر نہیں سمجھا جا سکتا ہے۔

امل موومنٹ اور مردہ موومنٹ نے ایک ساتھ مل کر خلیل اور فنیانوس کو سیاسی طور پر نشانہ بنانے کی کوشش کی ہے۔


لبنان کے صدر مائکل عون نے وزیر خارجہ شربل وهبة سے کہا ہے کہ وہ ان حالات کے بارے میں جاننے کے لئے ضروری رابطے کریں جن سے امریکی خزانے کو حالیہ پابندیاں عائد کرنے کا اشارہ ہوا ہے تاکہ اس کی بنیاد پر کچھ کیا جا سکے۔(۔۔۔)


جمعرات 22 محرم الحرام 1442 ہجرى - 10 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15262]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا