میٹیس نے اسد کو ختم کرنے کے امریکی منصوبے کی مخالفت کی

میٹیس نے اسد کو ختم کرنے کے امریکی منصوبے کی مخالفت کی

بدھ, 16 September, 2020 - 17:45
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ (دائیں) اور جیمز میٹیس کو دیکھا جا سکتا ہے (محفوظ شدہ دستاویزات - رائٹرز)
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ وہ شام میں کیمیائی حملوں کے بعد شامی صدر بشار الاسد کو معزول کرنا چاہتے ہیں لیکن اس وقت ان کے وزیر دفاع جیمز میٹیس نے اس معاملے کی مخالفت کی ہے۔

ٹرمپ نے گزشتہ روز امریکی "فاکس نیوز" کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ اگر انہوں نے خاتمہ کا فیصلہ کیا ہوتا تو وہ اسے ہی ترجیح دیتے اور انہوں نے اسی وقت یہ اشارہ بھی کیا ہے کہ انہیں اپنے فیصلے پر پچھتاوا نہیں ہے اور یہ بھی کہا کہ میں نے اسے ختم کرنے کو ترجیح دی ہے اور معاملہ تیار ہے لیکن میٹیس اس کے خلاف ہیں کیونکہ وہ (میٹیس) ایک بہت ہی برے جنرل ہیں اور انہوں نے اوباما کے ساتھ کام کیا تھا اور اسے برطرف کیا گیا اور میرے ساتھ کام کیا اور میں نے بھی برطرف کیا اور وہ ایک برے رہنما تھے اور وہ (داعش) کو ختم کرنے میں ناکام رہے اور ہم نے (آئی ایس آئی ایس) کے ساتھ ایک عمدہ کام کیا اور تنظیم کا خاتمہ کیا ، اور ہم (داعش کے رہنما ابوبکر) البغدادی اور (ایرانی گارڈ میں قدس فورس کے کمانڈر) قاسم سلیمانی کو ختم کیا۔


ٹرمپ کے اس بیان سے بہت سوں کو حیرت کا سامنا کرنا پڑا ہے اور خاص طور پر جب یہ بیان ان کے سابقہ ​​بیانات سے متصادم ہے جس میں انہوں نے اسد کو ختم کرنے کے کسی ارادے سے انکار کیا ہے۔(۔۔۔)


بدھ 28 محرم الحرام 1442 ہجرى - 16 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15268]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا