امن معاہدہ کے اگلے دن بندرگاہوں کو جوڑنے کے لئے ہوئی حرکت

امن معاہدہ کے اگلے دن بندرگاہوں کو جوڑنے کے لئے ہوئی حرکت

جمعرات, 17 September, 2020 - 13:15
امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو منگل کے دن وائٹ ہاؤس میں متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ شیخ عبد اللہ بن زاید کا استقبال کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (ڈی پی اے)
بحرین اور متحدہ عرب امارات کی طرف سے واشنگٹن میں اسرائیل کے ساتھ ہونے والے امن معاہدوں پر دستخط کرنے کے اگلے دن ہی متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین بندرگاہوں کو جوڑنے کے ساتھ ساتھ حقیقت میں دیگر چیزوں کو لانے کی کوششیں شروع ہو گئی ہیں۔

"ڈی پی ورلڈ" کمپنی اسرائیل میں ایلات بندرگاہ اور خلیج عرب کے ساحل پر دبئی میں جبل علی کی بندرگاہ کے مابین براہ راست لائن قائم کرنے پر غور کر رہی ہے اور اماراتی کمپنی کا کہنا ہے کہ اس نے دونوں ممالک کے مابین تجارت کے لئے ضروری انفراسٹرکچر کی ترقی کے مواقع کا جائزہ لینے کے مقصد سے اسرائیلی کمپنی ڈورٹاور کے ساتھ افہام وتفہیم کے دستاویز پر دستخط کیے ہیں۔



"ڈی پی ورلڈ" گروپ کے چیئرمین اور سی ای او سلطان احمد بن سلیم نے کہا ہے کہ اسرائیلی بندرگاہ اشدود اور حیفا کا ایک بہترین مقام ہے اور موقع ملنے پر ان کی کمپنی وہاں موجودگی کے سلسلہ میں سوچے گی۔(۔۔۔)


جمعرات 29 محرم الحرام 1442 ہجرى - 17 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15269]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا