اسرائیل کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کے سلسلہ میں سوڈانی مطالبے

اسرائیل کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کے سلسلہ میں سوڈانی مطالبے

جمعرات, 24 September, 2020 - 13:00
گزشتہ ماہ برہان اور پومپیو کو خرطوم کے آخری دورہ کے دوران دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف بی)
ذرائع نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ سوڈان اور امریکی انتظامیہ نے ایک معاہدہ پر دستخط کیا ہے جس میں دہشت گردی کی کفالت کرنے والے ممالک کی امریکی فہرست سے خرطوم کو ہٹانا بھی شامل ہے اور  توقع ہے کہ اس کا اعلان چند دنوں میں ہوگا اور اس کے علاوہ اس خطے میں امن کے قیام اور فلسطینی حقوق کے تحفظ کے سلسلہ میں اسرائیل کے ساتھ عرب تعلقات کو معمول پر لانے کے کردار کے بارے میں ایک ابتدائی معاہدہ ہوا ہے۔

 خرطوم نے تعلقات کو معمول پر لانے کے سلسلہ میں اپنے موقف کے بدلہ چند مطالبات کئے ہیں جن میں مالی اعانت کا ایک پیکیج فراہم کرنا ہے اور بین الاقوامی مالیاتی اداروں سے قرض لینے میں سہولت پیدا کرنا بھی شامل ہے۔


ذرائع نے الشرق الاوسط کو بتایا ہے کہ اس معاہدہ سے سوڈان کو سات بلین امریکی ڈالر کی امداد فراہم ہوگی اور عرب اسرائیل امن معاہدوں میں اس کے کردار کی وضاحت بھی ہوگی۔


توقع کی جارہی ہے کہ سوڈانی عبوری خود مختاری کونسل کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عبد الفتاح البرہان خود مختار کونسل اور وزراء کے مابین مشترکہ اجلاس کریں گے تاکہ امریکی فریق کے ساتھ مذاکرات اور خصوصا اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے سلسلہ میں متفقہ موقف اختیار کیا جا سکے۔(۔۔۔)


جمعرات 7 صفر المظفر 1442 ہجرى - 24 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15276]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا