ناصریہ قبیلے عراقی اغوا کیے گئے بحران کی لکیر میں داخل ہوئے

ناصریہ قبیلے عراقی اغوا کیے گئے بحران کی لکیر میں داخل ہوئے

جمعرات, 24 September, 2020 - 17:15
ناصریہ قبیلے کو اپنے شیخ كاظم آل شبرم کے مکان پر چھاپہ مارنے کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (ٹویٹر)
اس عراقی کارکن سجاد کے معاملے میں ابھی بھی پیچیدگی ہے جسے گزشتہ ہفتہ ایک مسلح گروہ نے اغوا کیا تھا پھر اس کے بعد یہ معاملہ ایک سماجی تحفظ کے بحران میں تبدیل ہو گیا اور خاص طور پر جب اس انسداد دہشت گردی ادارہ کے آپریشن کے سلسلہ میں کچھ لوگوں کے حامی ہونے اور کچھ لوگوں کے مخالف ہونے کے مابین اس مسئلے میں ناصریہ قبیلے داخل ہو گئے جسے کارکن کو آزاد کرنے اور ملوث افراد کو گرفتار کرنے کے لئے ایک آپریشن شروع کرنے کے مقصد سے بغداد سے بھیجا گیا تھا۔

اغوا میں ملوث عناصر، ان کے ٹھکانے، عدلیہ کے ذریعہ ان میں سے دو کے خلاف گرفتاری کا وارنٹ جاری کرنے، جاری چھاپوں اور تلاشیوں کا علم سیکیورٹی فورسز کو ہونے کے باوجود سیکیورٹی فورسز اور خصوصا انسداد دہشت گردی سروس کی کوششوں کے نتیجے میں ٹھوس نتائج برآمد نہیں ہو سکے ہیں جس سے حکومت اور اس انسداد دہشت گردی کی خدمات کو شدید شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا ہے جو ساز وسامان، تربیت اور نظم وضبط کے لحاظ سے سکیورٹی کے اعلی اداروں میں سے ایک ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 7 صفر المظفر 1442 ہجرى - 24 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15276]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا