شمال مشرقی شام میں 3 تعلیمی نصاب

شمال مشرقی شام میں 3 تعلیمی نصاب

پیر, 28 September, 2020 - 18:30
شہر الحسکہ میں پناہگزینوں کے کیمپوں کی ایک بچی کو یونیسف کے لوگو کے ساتھ ایک بیگ اٹھائے دیکھا جا سکتا ہے (الشرق الاوسط)
شمال مشرقی شام میں کرد خود مختار انتظامیہ کی ایجوکیشن اتھارٹی نے اپنے اثر ورسوخ کے علاقوں میں پڑھانے کے لئے تین تعلیمی نصاب کو اپنایا ہے اور ان میں بچوں کی دیکھ بھال کے لئے اقوام متحدہ کے "یونیسیف" کے ذریعہ منظور شدہ نصاب بھی شامل ہے۔

اس نصاب کو خودمختار انتظامیہ کے لئے ایک خاص انداز میں تقسیم کیا گیا ہے جو الجزیرہ اور فرات کے علاقوں کے اسکولوں میں اور حلب کے دیہی علاقوں میں الشهباءکے علاقوں اور کیمپوں میں موجود افرین کے پناہ گزینوں میں تقسیم کیا گیا ہے اور اس کے علاوہ بے گھر شامی شہریوں کے کیمپوں میں بھی پڑھائے جاتے ہیں۔


جہاں تک دوسرے نصاب کی بات ہے تو یہ سرکاری شامی تعلیمی نصاب ہے اور یہ منبج شہر اور اس کے دیہی علاقوں اور پڑوسی قصبے العريمة میں تعلیمی کمپلیکس اور اسکولوں میں پڑھایا جاتا ہے جبکہ یونیسیف نے شہر رقہ اور مشرقی دیہی علاقوں کے شہروں اور قصبوں کو جو جمہوریہ کے زیر کنٹرول ہیں ان میں اس کے نصاب کی منظوری دی ہے اور سول احتجاج کے بعد اس نے خود مختار انتظامیہ کے نصاب کو پڑھانے سے انکار کردیا ہے۔(۔۔۔)


پیر 11 صفر المظفر 1442 ہجرى - 28 ستمبر 2020ء شماره نمبر [15280]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا