درعا میں دمشق کے خلاف"روسی آباد کار" شخص کے قتل کرنے کا الزام عائد

درعا میں دمشق کے خلاف"روسی آباد کار" شخص کے قتل کرنے کا الزام عائد

جمعہ, 16 October, 2020 - 18:00
درعا میں کل جنگجوؤں اور عام شہریوں کو اپوزیشن رہنماؤں کے جنازہ میں شریک دیکھا جا سکتا ہے (درعا نیوز)
گزشتہ روز درعا میں شامی حزب اختلاف کے رہنماؤں کی آخری رسومات میں تقریبا تین ہزار افراد شریک ہوئے ہیں جبکہ اس طرح کے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ پرسو شام ہونے والے اس آپریشن کے پیچھے حکومت کی فوجیں شامل ہیں اور متاثرہ رہنماؤں میں ممتاز رہنما ادھم اکراد شامل ہیں جنہوں نے سنہ 2018 کے وسط میں روس کے ساتھ مسائل کو حل کرنے کے سلسلہ میں دستخط کرنے میں حصہ لیا تھا۔

حفوف انسان کی شامی رصد گاہ نے درعا البلد شہر میں دھڑوں کے صفوں میں رہنماؤں اور سابق جنگجوؤں کی آخری رسومات میں تقریبا 3000 شہریوں کے نکلنے کے بارے میں بات کی ہے اور انہوں نے شامی حکومت کی حکومت کا تختہ الٹنے کا مطالبہ کرتے ہوئے نعرے لگائے ہیں اور پرسو روز ہونے والے اس قتل کی ذمہ داری حکومت اور اس کی سلامتی ادارے پر لگائی ہے۔(۔۔۔)


جمعہ 29 صفر المظفر 1442 ہجرى – 16 اکتوبر 2020ء شماره نمبر [15298]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا