شام کے ساحل پر لگی آگ سے "فتح" کی نزاکت کا پتہ چلتا ہے

شام کے ساحل پر لگی آگ سے "فتح" کی نزاکت کا پتہ چلتا ہے

ہفتہ, 17 October, 2020 - 16:00
شام کے ساحل میں آگ لگنے کے بعد ایک شخص کو اپنے باغ کا معائنہ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
کچھ روز قبل شام کے ساحل پر آگ کی تباہی نے حکومت کی فوجی فتوحات کی نزاکت کا انکشاف کیا ہے کیونکہ وہ کہ متاثرہ افراد کو فائر فائٹنگ سامان اور خدمات فراہم کرنے میں ناکام رہی ہے۔

متاثرہ علاقوں میں "الشرق الاوسط" کی تحقیقات سے معلوم ہوا ہے کہ صدر بشار الاسد کے کنبے کے گڑھ لاذقیہ کے جنوب میں واقع قرداحہ کے آس پاس کے علاقوں سمیت راکھ کا رنگ پوری پہاڑیوں کی لپیٹ میں ہے اور یہ کئی دہائیوں کے بعد فائر فائٹنگ ٹیموں کے ذریعہ شام کے ساحل پر اثر انداز ہونے والی آگ کی بدترین لہر کو کنٹرول کرنے کے بعد سامنے آیا ہے اور متعدد دیہاتی اپنے معمولی مکانات کے سامنے کھڑے ہیں جو زیتون کے باغوں کے راکھ اور صنوبر کے درختوں کی سینکڑوں دھنوں کی راکھوں کو ندامت سے دیکھ رہے ہیں جو آگ سے تباہ ہوگئے ہیں۔(۔۔۔)


ہفتہ 01 ربیع الاول 1442 ہجرى – 17 اکتوبر 2020ء شماره نمبر [15299]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا