مغربی ممالک قامشلی کے ساتھ "چھیڑ چھاڑ" کرتے ہیں اور دمشق کو سزا دیتے ہیں

مغربی ممالک قامشلی کے ساتھ "چھیڑ چھاڑ" کرتے ہیں اور دمشق کو سزا دیتے ہیں

اتوار, 18 October, 2020 - 10:30
کل خود مختار انتظامیہ میں خارجہ تعلقات کے نائب سربراہ فنر الكعيط کے ساتھ شامی فائل کے لئے سویڈش کے خصوصی ایلچی کو دیکھا جا سکتا ہے (الشرق الاوسط)
مغربی ممالک نے شمال مشرقی شام میں خود مختار انتظامیہ سے اپنے رابطے تیز کردیئے ہیں جو اس وقت قامشلی کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے کے مترادف ہے اور دوسری طرف برسلز اور واشنگٹن نے دمشق پر پابندیاں عائد کردی ہے۔

گزشتہ روز سویڈن کی وزارت خارجہ کا ایک اعلی سطحی وفد شام کی فائل کے لئے اس کے خصوصی مندوب پیرو اورینس کی سربراہی میں خودمختار انتظامیہ کے علاقوں میں پہنچا ہے جو شامی ڈیموکریٹک فورسز کے زیر کنٹرول ہے تاکہ سیاسی اور انسان دوست فائلوں پر تبادلہ خیال کیا جا سکے اور شامی ڈیموکریٹک فورسز کے کمانڈر مظلوم عبدی نے کچھ روز قبل انقرہ میں ترک وزیر خارجہ مولود جاويش اوغلو کی موجودگی میں شام سے ترکی کی واپسی کی دعوت اور سویڈش وزیر خارجہ انا لنڈہ کے بیانات کا خیر مقدم کیا ہے۔(۔۔۔)


اتوار 01 ربیع الاول 1442 ہجرى – 18 اکتوبر 2020ء شماره نمبر [15300]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا