غیر ملکی کارکنوں کے لئے سعودی اقدام

غیر ملکی کارکنوں کے لئے سعودی اقدام

جمعرات, 5 November, 2020 - 14:30
سعودی عرب نے معاہدے کے تعلقات میں بہتری لانے کے لئے پہل کا آغاز کیا ہے جس کی وجہ سے کام کے میدان میں غیر ملکی کارکنوں کی نقل وحرکت میں لچک پیدا ہوگی (الشرق الاوسط)
گزشتہ کفالت کے نظام کے خاتمے کے بعد سعودی عرب نے گزشتہ روز لیبر مارکیٹ میں غیر ملکی کارکنوں کے لئے معاہدہ کے رشتے کو بہتر بنانے کے سلسلہ میں باضابطہ طور پر ایک اقدام کا اعلان کیا ہے جس کے تحت غیر ملکی ملازمین کو اس وقت ملازمت کی تبدیلی میں تھوڑی راحت ملے گی جب ان کے  کام کے معاہدے کا وقت ختم ہو جائے گا اور اس وقت اسے کسی منظوری کی ضرورت نہیں ہوگی۔

یہ اقدام جو مارچ 2021 کے وسط میں عمل میں آئے گا ایک غیر ملکی شہری کو اس کی وجہ سے ملک سے باہر سفر کرنے اور واپس آنے کی اجازت ملے گی اور معاہدے کے خاتمے کے بعد فوری طور پر اسے روانہ ہونے کی بھی اجازت ہوگی اور اس کے لئے وہ اپنے ذمہ دار کو اطلاع دے دے لیکن اس کی رضامندی کی ضرورت نہیں ہوگی۔(۔۔۔)


جمعرات  19 ربیع الاول 1442 ہجرى – 05 نومبر 2020ء شماره نمبر [15318]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا