بائیڈن کو انتقالی مرحلہ کے مینڈیٹ کا انتظار ہے اور ٹرمپ اپیلوں کے لئے جمع ہیں

بائیڈن کو انتقالی مرحلہ کے مینڈیٹ کا انتظار ہے اور ٹرمپ اپیلوں کے لئے جمع ہیں

منگل, 10 November, 2020 - 12:45
اگلے جنوری کو واشنگٹن میں دارالحکومت کی عمارت کے سامنے نئے امریکی صدر کے افتتاح کے لئے مقرر کردہ مقام پر تیاریاں شروع ہو چکی ہیں (ای پی اے)
کل پیر کے دن امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 2020 کے صدارتی انتخابات میں اپنے حریف جو بائیڈن سے ہونے والے اپنے نقصان کو مسترد کرتے ہوئے ان ریاستوں میں ووٹوں کی گنتی کے معاملے میں مزید عدالتی لڑائیوں اور اپیلوں کا سلسلہ شروع کرنے والے ہیں جہاں سے وائٹ ہاؤس کی دوڑ کا فیصلہ ہوا ہے اور ایک حیران کن اقدام کے طور پر ٹرمپ نے کل وزیر دفاع مارک ایسپر کو برخاست کرنے کا اعلان کیا ہے لیکن یہ واضح نہیں ہوا ہے کہ آیا برخاستگی کا انتخابی نتائج کے سلسلہ میں وزیر کے موقف سے کوئی تعلق ہے یا نہیں۔

ان پیشرفتوں کی روشنی میں یہ خدشہ پیدا ہوا ہے کہ صدارتی منتقلی کے عمل کو رکاوٹوں کا نشانہ بنایا جائے گا اور ان میں سے سب سے پہلا معاملہ یہ ہے کہ انتقالی مرحلہ کی مالی اعانت کے لئے ضروری مینڈیٹ جاری کرنے کے سلسلہ میں ایک سینئر انتظامی ملازم نے اس سے انکار کرنا ہے اور واشنگٹن پوسٹ نے اطلاع دی ہے کہ ٹرمپ کے ذریعہ مقرر کردہ پبلک سروسز ایڈمنسٹریشن کی ڈائریکٹر امیلی مورفی  نے بائیڈن کی ٹیم کو باضابطہ طور پر کام شروع کرنے کی اجازت دینے والے خط پر دستخط کرنے سے انکار کردیا ہے۔(۔۔۔)


منگل 24 ربیع الاول 1442 ہجرى – 10 نومبر 2020ء شماره نمبر [15323]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا