روس نے بحر احمر میں «طرطوس» کی کاپی کرنے کی کی کوشش

روس نے بحر احمر میں «طرطوس» کی کاپی کرنے کی کی کوشش

بدھ, 18 November, 2020 - 10:15
شام کی بندرگاہ طرطوس میں روسی بحریہ کے فوجیوں کو اپنی لڑائی جہاز کے سامنے قطار میں کھڑے دیکھا جا سکتا ہے (محفوظ شدہ دستاویزات) (الشرق الاوسط)
مشرق وسطی اور شمالی افریقہ میں اپنی براہ راست فوجی موجودگی اور اس کی بحری اکائیوں کی تعیناتی کی کوششوں کے تناظر میں ایک قابل توسیع 25 سالہ معاہدے کا اعلان آیا ہے جس کی بنیاد پر روس سوڈان کے ساتھ بحیرہ احمر میں روسی جنگی بحری جہازوں کی خدمت کے لئے بحری رسد کا ایک مرکز قائم کرنے کی کوشش کر رہا ہے جو شام کے شہر طرطوس میں روسی اڈے کے قریب تیار ہوگا۔

خرطوم اور متعلقہ علاقائی اور بین الاقوامی طاقتوں کی پوزیشن کی وضاحت کے منتظر ہونے کے ساتھ ہی ماسکو نے سوڈانی سرزمین پر ایک اڈے کے قیام کے بارے میں روسی صدر ولادیمیر پوتن کا فرمان شائع کیا ہے جو ایٹمی ٹکنالوجی سے لیس جہازوں کو ایڈجسٹ کر سکے گا۔


اس مسودے میں اس بات کا ذکر ہے کہ روس پورٹ سوڈان شہر میں اڈے کے ہوائی دفاع کو منظم کرنے کے لئے سوڈان کو ہتھیاروں اور فوجی سازوسامان کی فراہمی کے لئے تیار ہے لیکن اس کے مقابلہ میں روس سوڈانی فضائی حدود کو استعمال کر سکے گا اور اس اڈے کی حفاظت کے لئے سوڈان میں عارضی فوجی پوائنٹس قائم کرے گا۔(۔۔۔)


بدھ 02 ربیع الثانی 1442 ہجرى – 18 نومبر 2020ء شماره نمبر [15331]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا