ترکی نے ایرینی واقعہ کے باوجود اسلحہ بھیجنے کا کام دوبارہ شروع کر دیا ہے

ترکی نے ایرینی واقعہ کے باوجود اسلحہ بھیجنے کا کام دوبارہ شروع کر دیا ہے

جمعہ, 27 November, 2020 - 17:15
تاجورہ میں ترک فوج کے ممبروں کی زیر نگرانی ایک فوجی تربیت کے دوران الوفاق فورس کے ممبران کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
گزشتہ روز بحیرہ روم میں طیاروں کی نقل وحرکت کی نگرانی میں مہارت حاصل کرنے والی ایک ویب سائٹ نے بحیرہ روم کے وسط اور مشرق میں ترکی کے فوجی کارگو طیاروں کی لیبیا کی طرف نقل وحرکت کا انکشاف کیا ہے۔

اطالوی سائٹ اٹیمل راڈار نے بتایا ہے کہ اس نے مغربی لیبیا جانے والے دو فوجی کارگو طیارے دیکھے ہیں جو غالبا مصراتہ کی طرف جارہے تھے اور اس سے اس بات کی طرف اشارہ ہو رہا ہے کہ ترکی کی طرف سے مغربی لیبیا میں اپنے تعینات عناصر اور "الوفاق" حکومت کی افواج کے ساتھ مل کر لڑنے والے عناصر کے لئے ہتھیاروں اور فوجی سامانوں کی منتقلی جاری ہے۔


یورپی مانیٹرنگ آپریشن "آیرینی" کے دائرہ میں روم کے اندر اتوار کے روز جرمن فورسز کی طرف سے ترکی کے تجارتی کارگو جہاز کی تلاشی لینے اور جنگ بندی کے باوجود لیبیا تک ترک فوجی ہوائی پل کے تسلسل کا انکشاف ہوا ہے۔(۔۔۔)


جمعہ 12 ربیع الآخر 1442 ہجرى – 27 نومبر 2020ء شماره نمبر [15340]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا