"امت" کی نئی قیادت میں مہدی کے بیٹوں کی عدم موجودگی

"امت" کی نئی قیادت میں مہدی کے بیٹوں کی عدم موجودگی

منگل, 29 December, 2020 - 12:00
فضل الله برمة ناصر کو دیکھا جا سکتا ہے
سوڈانی قومی امت پارٹی نے صادق المہدی مرحوم کے جانشیں کے طور پر اپنی آٹھویں جنرل کانفرنس کے انعقاد تک ریٹائرڈ میجر جنرل فضل اللہ برمہ ناصر کو اپنا چیئرمین منتخب کیا ہے جبکہ انصار کی قیادت کو انصار شوری کمیشن کے سربراہ عبد المحمود ابو کے سپرد کیا گیا ہے اور پارٹی کی نئی عبوری قیادت کے سلسلہ میں حیرت انگیز بات یہ ہے کہ اس میں اس مہدی کے بیٹوں کو دور رکھا گیا ہے جن کا انتقال گزشتہ جمعرات کو کورونا کی وجہ سے متحدہ عرب امارات میں ہوا ہے۔

مہدی کے پاس پارٹی کی قیادت کے ساتھ ساتھ انصار فرقہ کی امامت کی بھی ذمہ داری تھی اور وہ 1964 میں اپنے انتخاب کے بعد سے پارٹی کی قیادت کررہے تھے اور وہ 2009 میں پارٹی کی آخری عام کانفرنس میں دوبارہ منتخب ہوئے تھے۔


ناصر نے اس وقت پارٹی کی قیادت سنبھالنے کے بعد اس کی جانشینی کے لئے مہدی خاندان میں مقابلے کی شدت میں اضافے کے بارے میں قیاس آرائیوں کا دروازہ بند کردیا ہے اور ان میں سب سے نمایاں ان کی بیٹی پارٹی کے موجودہ نائب صدر ڈاکٹر مریم ہیں اور ان کے بڑے بیٹے عبد الرحمٰن ہیں جو معزول صدر عمر البشیر کے سابقہ ​​معاون ہیں۔(۔۔۔)


اتوار 14 ربیع الآخر 1442 ہجرى – 29 نومبر 2020ء شماره نمبر [15342]


Related News



انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا