"نیٹو" انقرہ اور ایتھنز کے مابین تناؤ کو کم کرنے کے طریقہ کار کو تقویت دینے کے لئے تیار ہے

"نیٹو" انقرہ اور ایتھنز کے مابین تناؤ کو کم کرنے کے طریقہ کار کو تقویت دینے کے لئے تیار ہے

جمعرات, 3 December, 2020 - 17:30
"نیٹو" کے سکریٹری جنرل نے تصدیق کی کہ ترکی-یونانی تنازعہ کا حل جرمنی کی زیر قیادت ثالثی کی کوششوں اور دونوں ممالک کی سیاسی مرضی پر منحصر ہے (ای پی اے)
مشرقی بحیرہ روم، لیبیا، شام اور کاراباخ میں ترک مداخلتوں اور مواقف کے سلسلہ امریکی رد عمل کے پس منظر میں شمالی اٹلانٹک معاہدہ تنظیم (نیٹو) کے وزیر خارجہ کے فرضی اجلاس کے دوران امریکہ اور ترکی کے وزرائے خارجہ کے مابین کچھ ناچاقی ہوئی ہے جبکہ "نیٹو" کے سکریٹری جنرل نے انقرہ اور ایتھنز کے مابین تناؤ کو کم کرنے کی کوششوں کے لئے ایک بار پھر تیاری کا اظہار کیا ہے اور انقرہ نے بھی غیر مشروط مذاکرات کے لئے اپنی تیاری کا اعلان کیا ہے۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ترکی پر تنقید کرتے ہوئے نیٹو کے اصولوں اور اقدامات پر عمل پیرا نہ ہونے اور اس کے اتحاد کو مجروح کرنے کا الزام عائد کیا ہے اور مشرقی بحیرہ روم، لیبیا، شام اور کاراباخ میں اس کی سرگرمیوں کو اشتعال انگیز قرار دیا ہے۔(۔۔۔)


جمعرات  18 ربیع الآخر 1442 ہجرى – 03 دسمبر 2020ء شماره نمبر [15346]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا