سلیمانی کے قتل کی برسی کے موقع پر بغداد میں انتظار کا ماحول

سلیمانی کے قتل کی برسی کے موقع پر بغداد میں انتظار کا ماحول

ہفتہ, 2 January, 2021 - 12:15
گزشتہ روز ایران کے حامی دھڑوں کے حامیوں کو قاسم سلیمانی اور ابو مہدی المہندس کی تصاویر اٹھا کر بغداد میں مظاہرہ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
بغداد میں 3 جنوری کو بغداد ہوائی اڈے کے قریب امریکی فضائی حملے میں ایرانی "قدس فورس" کے سابق کمانڈر قاسم سلیمانی اور پاپولر موبلائزیشن اتھارٹی کے عراقی نائب سربراہ ابو مہدی المہندس کے قتل کی پہلی برسی کے موقع پر سخت سیکیورٹی ماحول کا مشاہدہ کیا جا رہا ہے۔

عراقی دار الحکومت میں سخت سیکیورٹی ماحول ہے اور "گرین زون" کو جہاں امریکی سفارت خانہ واقع ہے بند کردیا گیا ہے اور خواہ مسلح افواج کے کمانڈر انچیف چیف کے دفتر میں ہو جو وزیر اعظم مصطفی الکاظمی ہیں یا جوائنٹ آپریشن کمانڈ ہیں فوجی اہلکاروں نے راکٹ لانچروں کی تلاشی لینے یا دہشت گردی کی کارروائیوں کی توقع کرنے کے سلسلہ میں اپنا جواز پیش کیا چاہے۔


تہران میں پاسداران انقلاب کے کمانڈر حسین سلامی نے کہا ہے کہ ان کی افواج اپنے خلاف ہونے والے کسی بھی ممکنہ حملے کا کسی بھی طرح سے جواب دینے کے لئے تیار ہیں جبکہ سلییمانی کے جانشین اسماعیل قاآنی نے 72 گھنٹوں کے اندر دوسری بار امریکی اہلکاروں کو نشانہ بنانے کی دھمکی دی ہے اور فرانسیسی پریس ایجنسی کے مطابق انہوں نے تہران یونیورسٹی میں ایک سلیمانی یادگار تقریب کے ساتھ اپنے خطاب میں کہا کہ یہ رد عمل امریکہ کے گھروں کے اندر سے آسکتا ہے اور قاآنی نے عراق میں ایرانی حامی ملیشیاؤںںں اور امریکی افواج کے خلاف اقدام کرنے کی تیاری کو سراہا ہے۔(۔۔۔)


ہفتہ  19 جمادی الاولی 1442 ہجرى – 02 جنوری 2021ء شماره نمبر [15376]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا