سلیمانی کی یاد کے موقع پر عراقی شیعہ ہاؤس کے اختلافات میں اضافہ

سلیمانی کی یاد کے موقع پر عراقی شیعہ ہاؤس کے اختلافات میں اضافہ

منگل, 5 January, 2021 - 16:45
پرسو روز ہونے والے منعقدہ جنرل قاسم سلیمانی اور عراقی پاپولر موبلائزیشن اتھارٹی کے نائب سربراہ ابو مہدی المہندس کے قتل کی یادگار تقریب کے موقع پر عراقی شیعہ ہاؤس کے اندر اختلافات میں اضافہ کر دیا ہے۔

ایران نواز دھڑوں کے مبلغین اور مظاہرین نے بغداد کے گرین زون اور امریکی سفارتخانے کو متاثر کرنے والی بمباری کارروائیوں کے خاتمے کے لئے صدامت پسند تحریک کے رہنما مقتدا الصدر کی طرف سے ہونے والے دعووں کے بعد صدر کے ترجمان صلاح العبیدی نے اس دھڑوں اور سابق وزیر اعظم نوری المالکی پر کلامی حملہ کرتے ہوئے ان کا جواب دیا ہے اور انہوں نے عراقی فوج دوچند کرنے اور 2014 میں داعش کے عروج کا ذمہ دار نوری المالکی کو بنایا ہے۔


العبیدی نے ٹیلی ویژن انٹرویو میں کہا ہے کہ مسلح دھڑوں نے داعش کے خلاف جنگ میں امریکی افواج کی شرکت کا خیر مقدم کیا ہے اور عراقی حکومت کی طرف سے (آئی ایس آئی ایس) سے لڑنے کی درخواست پر امریکی افواج عراق آئے ہیں۔(۔۔۔)


منگل  22 جمادی الاولی 1442 ہجرى – 05 جنوری 2021ء شماره نمبر [15379]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا