"جرف الصخر" حملے کے سلسلہ میں تنازعہ اور امریکہ نے اس ذمہ داری سے کیا انکار

"جرف الصخر" حملے کے سلسلہ میں تنازعہ اور امریکہ نے اس ذمہ داری سے کیا انکار

بدھ, 20 January, 2021 - 14:30
عراقی جوائنٹ آپریشنز کمانڈ کے نائب کمانڈر عبد الامیر الشمری کو پرسو روز شام سے متصل سرحد پر واقع القائم میں فوجی یونٹوں کا معائنہ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
اس بم دھماکے کے بارے میں عراق کی طرف سے متضاد بیانات سامنے آئے ہیں جس میں جورف الصخر علاقے کو نشانہ بنایا گیا ہے اور یہ علاقہ بغداد کے جنوب میں واقع ایرانی حمایت یافتہ حزب اللہ بریگیڈ کے زیرقیادت ہے۔

 ایک طرف سیکیورٹی میڈیا سیل نے اعلان کیا ہے کہ "آئی ایس آئی ایس" نے علاقے میں واقع بجلی کے ٹاوروں پر بمباری کی ہے تو دمسری طرف آرمڈ فورسز کے چیف کمانڈر کے ترجمان میجر جنرل یحییٰ رسول نے "داعش" کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔


اسی سلسلہ میں بغداد میں امریکی سفارتخانے نے بم دھماکے میں امریکی فورسز کے کسی بھی کردار کے ہونے کی تردید کی ہے۔(۔۔۔)


بدھ 07 جمادی الآخر 1442 ہجرى – 20 جنوری 2021ء شماره نمبر [15393]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا