یورپ نے نئے "کورونا" علاقوں کو کیا الگ تھلگ

یورپ نے نئے "کورونا" علاقوں کو کیا الگ تھلگ

ہفتہ, 23 January, 2021 - 12:45
کل سیکڑوں لوگوں کو برازیل کے ریو ڈی جنیرو کے ساحل پر پہنچتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے جو کورونا سے متاثرہ ممالک میں شامل ہے (ای پی اے)
جمعرات کی رات دیر گئے اپنا کام ختم کرنے والے "کوویڈ ۔19" سے وابستہ یورپی سربراہ کانفرنس نے وائرس کے نئے تناؤ کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے "مایوس" کوشش میں یورپی یونین کے اندر نقل وحرکت کی آزادی پر پابندیاں سخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ وبائی حالت جہاں بھی ہوتا ہے وہاں غم، مایوسی، آنسو اور بے روزگاری پھیلتی ہے اور ایک سال میں اس سے متاثرہ افراد کی موت صرف 20 لاکھ تک ہی نہیں ہوئی ہے بلکہ معاشی زندگی کو بھی مفلوج کیا ہے لیکن ویکسینیشن مہموں سے وابستہ لوگوں کے لئے امید ہے کہ وہ اس وبا کے باوجود پوری دنیا میں جد وجہد کر رہے ہیں اور یہ سب اے ایف پی کے نمائندوں کے ذریعہ جمع کردہ تصاویر اور شہادتوں سے ظاہر ہوتا ہے۔

یہ یوروپی فیصلہ بیماریوں پر قابو پانے اور روک تھام کے سلسلہ میں یورپی مرکز کی طرف سے تناؤ کے ذریعہ پیدا ہونے والے صحت کے خطرے کی سطح میں اضافے کے چند گھنٹوں بعد سامنے آیا ہے اور اس میں غیر ضروری نقل وحرکت پر پابندی عائد کرنے کی سفارش کی گئی ہے اور حکومتوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ اگلے ہفتوں میں وبا کی وسیع لہر کی تیاری کے لئے اپنے صحت کے نظام کو مستحکم کریں۔(۔۔۔)


 


ہفتہ 10 جمادی الآخر 1442 ہجرى – 23 جنوری 2021ء شماره نمبر [15396]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا