اقوام متحدہ کی طرف سے ویکسین کی اجارہ داری کے نتائج کے بارے میں انتباہ

اقوام متحدہ کی طرف سے ویکسین کی اجارہ داری کے نتائج کے بارے میں انتباہ

منگل, 2 February, 2021 - 19:15
برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن کو گزشتہ روز ویسٹ یارکشائر کے شہر بٹلی شہر میں ایک ویکسینیشن سینٹر کے دورے کے دوران دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
یورپی یونین کے ممالک میں کورونا وائرس کے خلاف ویکسینیشن کے عمل میں تیزی لانے کی توقعات کی روشنی میں عالمی ادارہ صحت کے ایک ماہر نے اس کے بارے میں بات کی ہے اور اسے ایک اوپن ٹریڈ اینڈ جیو پولیٹیکل وار کے نام سے یاد کیا ہے اور یہ بھی طے کیا جائے گا کہ یہ ویکسینیشن کون شروع کرے گا اور کب شروع کرے گا اور انہوں نے مزید کہا کہ اس میں اصل فاتح ادویہ ساز کمپنیاں ہیں اور اسی طرح وائرس بھی پھیلتا رہے گا کیونکہ عالمی سطح پر ویکسی نیشن حکمت عملی کی عدم موجودگی میں نئے تغیر پزیر کورونا سب سے زیادہ تیزی سے پھیل رہا ہے۔

پچھلے مہینوں کے دوران عالمی ادارہ صحت نے متمول ممالک کو انتباہ کرنا بند نہیں کیا ہے کہ "کوویڈ ۔19" کے خلاف ویکسینیشن مہم خود بخود کافی نہیں ہوگی جب تک کہ تمام ممالک کو ویکسین بروقت تقسیم نہ کی جائے اور ڈبلیو ایچ او کے عہدیداروں نے بھی اقدار کی اجارہ داری کے حامل نتائج اور ان ممالک کے مابین شدید ویکسین کے حصول کے لئے سخت مقابلہ کے نتائج سے خبردار کیا ہے جو اپنی ضروریات سے زیادہ اسٹاک کرکے رکھ سکتے ہیں۔(۔۔۔)


منگل 20 جمادی الآخر 1442 ہجرى – 02 فروری 2021ء شماره نمبر [15407]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا