بائیڈن انتظامیہ نے ترکی کو "S-400" اور جمہوریت کے سلسلہ میں کیا خبردار

بائیڈن انتظامیہ نے ترکی کو "S-400" اور جمہوریت کے سلسلہ میں کیا خبردار

جمعرات, 4 February, 2021 - 13:15
روس سے ترکی کے علاقے میں پہنچتے ہوئے "S-400" میزائلوں کی ایک محفوظ شدہ فائل تصویر دیکھی جا سکتی ہے (اے پی)

نئی امریکی انتظامیہ کے عہد میں پہلے براہ راست رابطے میں واشنگٹن نے انقرہ کو متنبہ کیا ہے کہ روسی "S-400" فضائی دفاعی میزائل نظام کو حاصل کرنے سے نیٹو کے اتحاد اور تاثیر کو نقصان پہنچے گا اور اس نے جمہوری اداروں اور قانون کی حکمرانی کی حمایت کرنے کے عزم کی تصدیق کردی ہے۔


 


ترکی کے صدارتی ترجمان ابراہیم کالین کے ساتھ فون پر گفتگو کے بعد امریکی قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیون نے صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ کی طرف سے انقرہ اور ماسکو کے درمیان نیٹو کے اتحاد پر "S-400" معاہدے کے اثرات کے بارے میں دوبارہ تشویش کا اظہار کیا ہے۔


 


انقرہ کی طرف سے روسی "S-400" سسٹم کو خریدنے کے سبب سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے انسداد امریکی دشمن پابندیوں ایکٹ (کٹاسا) کے تحت ترکی کی دفاعی صنعت کے مشیر پر پابندیاں عائد کرنے کے بعد بائڈن انتظامیہ کی طرف سے بھی ترکوں کو انتباہ کیا گیا ہے۔(۔۔۔)


 


جمعرات 22 جمادی الآخر 1442 ہجرى – 04 فروری 2021ء شماره نمبر [15409]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا