شام کی 85٪ سرحدیں دمشق کے دشمنوں اور اس کے اتحادیوں کے قبضہ میں ہیں

شام کی 85٪ سرحدیں دمشق کے دشمنوں اور اس کے اتحادیوں کے قبضہ میں ہیں

ہفتہ, 13 February, 2021 - 11:15
ترکی کی سرحد کے قریب شمالی شام میں ترک فوجی گاڑیوں کو دیکھا جا سکتا ہے (محفوظ شدہ فائل فوٹو - اے ایف پی)
گزشتہ ایک دہائی کے دوران شام اور اس کی سرحدوں میں کنٹرول کے اتار چڑھاو کے ساتھ یہ بات واضح ہوئی ہے کہ حکومت کا کنٹرول ہمسایہ ممالک کے ساتھ اپنی زمینی سرحدوں کی صرف 15 فیصد علاقوں اور اپنی گزرگاہوں میں سے نصف یعنی 19 گزرگاہوں پر ہے اور 85 فیصد سرحدیں دمشق کے مخالفین اور اس کے اتحادیوں کے زیر اثر ہیں۔

گزشتہ سال2011 کے بعد سے پہلی بار اثر ورسوخ کے تین علاقوں کے مابین لائنوں کو مستحکم کیا گیا ہے جہاں حکومت نے روسی اور ایرانی تعاون سے ملک کے تقریبا 65 فیصد (جو رقبہ 185 ہزار مربع کلومیٹر ہے) علاقوں پر اپنا کنٹرول حاصل کیا ہے اور اس کے مقابلے میں فرات کے مشرق میں ایک چوتھائی حصہ واشنگٹن کے اتحادیوں اور 10 فیصد ترکی اور اس کے وفادار دھڑوں کے ہاتھ میں ہے۔


واشنگٹن انسٹی ٹیوٹ فار نزد ایسٹ اسٹڈیز میں فرانس کے محقق فیبریس بالانچ کے ایک مطالعے کے مطابق بین الاقوامی زمینی سرحدوں کے 15 فیصد حصوں پر فوج کا کنٹرول ہے جبکہ باقی حصے غیر ملکی جماعتوں کے درمیان تقسیم ہیں۔(۔۔۔)


ہفتہ 02 رجب 1442 ہجرى – 13 فروری 2021ء شماره نمبر [15418]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا