2024 میں ان غیر ملکی کمپنیوں کے ساتھ حکومت کا معاہدہ ہوا بند جن کا علاقائی ہیڈ کوارٹر سعودی عرب سے باہر ہے

2024 میں ان غیر ملکی کمپنیوں کے ساتھ حکومت کا معاہدہ ہوا بند جن کا علاقائی ہیڈ کوارٹر سعودی عرب سے باہر ہے

منگل, 16 February, 2021 - 16:15
سعودی حکومت نے سال 2024 کے آغاز سے ان غیر ملکی کمپنیوں کے ساتھ اپنے معاہدے کو روکنے کا فیصلہ کیا ہے جن کے علاقائی دفاتر سعودیسے باہر ہیں اور اس کا مقصد سرمایہ کاری کو فروغ دینا ہے، ملازمتیں پیدا کرنا ہے اور معاشی رساو کو کم کرنا ہے تاکہ ریاض 2030 حکمت عملی کے اہداف کے ساتھ ہم آہنگ ہو سکے۔

ایک سرکاری ذمہ دار نے سرکاری سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے ذریعے جاری بیان میں کہا ہے کہ سعودی عرب کسی بھی غیر ملکی تجارتی کمپنی یا اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ معاہدہ روکنے کے لئے پرعزم ہے جس کا علاقائی ہیڈکوارٹر ملک سے باہر خطے میں ہے اور اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ اس فیصلے میں حکومت کی ایجنسیاں، ادارے اور فنڈز یا اس کا کوئی بھی ادارہ ہو سب شامل ہیں۔


سعودی ایجنسی نے اس عہدیدار کے حوالے سے یہ بھی بتایا ہے کہ اس سے کسی بھی سرمایہ کار کی سعودی معیشت میں داخل ہونے یا نجی شعبے کے ساتھ معاملات جاری رکھنے کی صلاحیت متاثر نہیں ہوگی اور اس سے متعلقہ کنٹرول رواں سال 2021 کے دوران جاری کیے جائیں گے۔(۔۔۔)


منگل 05 رجب 1442 ہجرى – 16 فروری 2021ء شماره نمبر [15421]


Related News



انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا