لبنان میں "عالمگیریت" کی تجویز کے سلسلہ میں آپس میں ہوئی تقسیم

لبنان میں "عالمگیریت" کی تجویز کے سلسلہ میں آپس میں ہوئی تقسیم

جمعرات, 18 February, 2021 - 16:30
مورن پیٹریارچ بیچارہ الراعی کو دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
لبنانی سیاسی قوتیں مورن پیٹریارچ بیچارہ الراعی کے لبنانی مسئلے کو بین الاقوامی بنانے کے مطالبے پر تقسیم ہوگئیں ہیں کیونکہ کچھ لوگ ان کے حامی ہو چکے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ سیاسی اور اقتصادی بحرانوں میں گھرے ہوئے ملک کو بچانے کا یہ آخری موقع ہے اور کچھ لوگ ان کے مخالف ہیں کیونکہ ان کا کہنا ہے کہ یہ تباہی وبربادی، جنگ اور بیرون ملک کو لبنان پر حملہ کرنے کی دعوت دینے کے قائم مقام ہے جیسا کہ حزب اللہ نے اس بات کے ان انتباہات کے جواب میں دینے والے اپنے بیان میں کہا ہے کہ حکومت تشکیل دینے میں ناکامی اقوام متحدہ کے میثاق کے ساتویں باب کی طرف آمادہ کیا ہے۔

منگل کی شام حزب اللہ کا موقف اس کے ہائی پروفائل سکریٹری جنرل حسن نصر اللہ کی زبانی سامنے آیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ معاملے کو سلامتی کونسل میں جانے کا مطلب یہ ہے کہ ہم دنیا کے تمام ممالک کو ان کے مفادات کے حصول کے لئے لبنان لا رہے ہیں اور یہ لبنان کے مفاد کے مخالف ہے اور خودمختاری کے اصول سے بھی متصادم ہو رہا ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 07 رجب 1442 ہجرى – 18 فروری 2021ء شماره نمبر [15423]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا