امریکہ اور ایران کے مابین اختلافات: جوہری معاہدہ کو بچانے کی کوششوں میں پیدا ہوئیں پیچیدگییاں

امریکہ اور ایران کے مابین اختلافات: جوہری معاہدہ کو بچانے کی کوششوں میں پیدا ہوئیں پیچیدگییاں

اتوار, 21 February, 2021 - 10:00
ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
واشنگٹن اور تہران کے مابین پائے جانے والے سفارتی تنازعات کی وجہ سے جوہری معاہدے کو بچانے کی ان کوششوں میں پیچیدگياں پیدا ہو چکی ہیں جو معاہدہ میں شریک تین یورپی ممالک، برطانیہ، فرانس اور جرمنی کررہے ہیں اور اسی طرح بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کوشش کر رہی ہے جس کے ڈائریکٹر جنرل رافیل گروسی گزشتہ روز ایرانی دارالحکومت پہنچے ہیں تاکہ اسے تعاون پر راضی کرنے کی کوشش کی جا سکے۔
 
ایران اور امریکہ کے مابین اختلافات یہ ہیں کہ 2015 کے معاہدے کو بحال کرنے کے لئے پہلا قدم کون اٹھائے گا اور ایران کا اصرار ہے کہ امریکہ کو پہلے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے عائد پابندیاں ختم کرنی ہوگی اور واشنگٹن کا کہنا ہے کہ تہران کو پہلے معاہدے کی تعمیل کرنی ہوگی اور پرسو جمعہ کے روز وائٹ ہاؤس نے کہا ہے کہ امریکہ معاہدے میں واپسی کے سلسلہ میں اس کے اور بڑی طاقتوں کے ساتھ ممکنہ بات چیت سے قبل کوئی اضافی اقدامات اٹھانے کا ارادہ نہیں رکھتا ہے۔

دوسری طرف ایرانی حکومت کے ترجمان علی ربیعی نے کل کہا ہے کہ ہمیں یقین ہے کہ سفارتی جھگڑوں کے باوجود سفارتی اقدامات سے مثبت نتیجہ برآمد ہوں گے اور بلومبرگ نے ایک بزرگ یورپی سفارتکار کے حوالے سے کہا ہے کہ بہت سے لوگ ان اقدامات پر انحصار کریں گے جو ایران لینے کو تیار ہے اور انہوں نے اس بات کی طرف اشارہ بھی کیا ہے کہ تہران نے کوئی مضبوط اشارہ نہیں دکھایا ہے جبکہ وہ معاہدے کی پاسداری کی طرف لوٹنا بھی چاہتا ہے۔(۔۔۔)


اتوار 10 رجب 1442 ہجرى – 21 فروری 2021ء شماره نمبر [15426]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا