عباس اور عرفات کے بھتیجے کے مابین ہوئی افہام وتفہیم

عباس اور عرفات کے بھتیجے کے مابین ہوئی افہام وتفہیم

اتوار, 21 February, 2021 - 19:30
گزشتہ سال 27 ستمبر کو مغربی کنارے کے شہر طوباس میں صدر محمود عباس کے حامیوں کو ان کی تصاویر اٹھائے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے بی)
فلسطین کی "فتح" تحریک کے اندر مئی میں ہونے والے عام انتخابات قریب آنے اور اس کے دو ماہ بعد ہونے والے صدارتی انتخابات کے ساتھ ہی گزشتہ اوقات میں صفوں کو بند کرنے کے لئے مزید کوششوں کا مشاہدہ کیا گیا ہے اور اسی تناظر میں فلسطینی صدر محمود عباس اور فتح ی سنٹرل کمیٹی کے رکن، مرحوم فلسطینی رہنما یاسر عرفات کے بھتیجے ناصر القدوة کے مابین افہام وتفہیم کے اجلاس کا منظر بھی دیکھا گیا ہے۔

فتح موبلائزیشن اینڈ آرگنائزیشن کمیشن میں میڈیا آفس کے سربراہ منير الجاغوب نے گزشتہ روز (ہفتے کے روز) اعلان کیا ہے کہ مرکزی کمیٹی کے متعدد ممبروں کی موجودگی میں تحریک کے اتحاد اور اس کے فیصلوں کی پابندیوں کے سلسلہ میں عباس اور ناصر القدوة کے مابین ایک معاہدہ ہوا ہے اور الجاغوب کا اعلان فلسطینی علاقوں میں آئندہ انتخابات کے دوران القدوة کے ممکنہ بغاوت کی خبروں کی راہ روکنے کے لئے اس وقت سامنے آیا ہے جبکہ اس شخص نے اس سے قبل عباس کی سربراہی میں مرکزی اجلاس کا بائیکاٹ کیا تھا جو انتخابات پر تبادلۂ خیال کرنے کے لئے ہوا تھا اور پھر اس کے بعد متنازعہ بیانات بھی سامنے آئے۔(۔۔۔)


اتوار 10 رجب 1442 ہجرى – 21 فروری 2021ء شماره نمبر [15426]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا