عراقیوں سے پوپ کا خطاب: ہتھیاروں کو خاموش رہنے دیں اور تنوع کو باقی ہے

عراقیوں سے پوپ کا خطاب: ہتھیاروں کو خاموش رہنے دیں اور تنوع کو باقی ہے

ہفتہ, 6 March, 2021 - 11:45
گزشتہ روز پوپ فرانسس کو بغداد پیلس پہنچتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے جہاں ان کا استقبال صدر برہم صالح نے کیا ہے (اے پی)
گزشتہ روز پوپ فرانسس نے اپنے پہلے دورۂ عراق کے موقع پر عراقی صدارتی محل سے تنوع کو بچانے اور اسے بقائے باہمی میں تبدیل کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور اسی طرح انہوں نے اسلحہ کی آواز کو خاموش کرنے اور امن کے قیام کی طرف رخ کرنے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

پوپ کا جہاز گزشتہ دوپہر بغداد بین الاقوامی ہوائی اڈے پر اترا ہے جہاں عراقی وزیر اعظم مصطفی الکاظمی ان کا استقبال کرنے والوں میں سرفہرست تھے اور بغداد کے صدارتی محل میں صدر جمہوریہ برہم صالح عراق کے اعلی رہنماؤں اور پہلی لائن کے رہنماؤں کے ساتھ پوپ کے شاہکار استقبال کے انتظار میں تھے۔
 
پوپ نے اپنی تقریر میں کہا ہے کہ پچھلی دہائیوں کے دوران عراق جنگوں کی تباہ کاریوں اور دہشت گردی کی لعنت اور موت وتباہی لانے والے تنازعات سے دوچار ہے اور میں غیر انسانی حملے میں یزیدیوں اور معصوم متاثرین کا ذکر کرنے کے سوا کچھ نہیں کرسکتا ہوں۔(۔۔۔)


ہفتہ 23 رجب 1442 ہجرى – 06 مارچ 2021ء شماره نمبر [15439]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا