عون اور الضاحيہ کے مابین احتجاجات اور سیاسی پیغامات

عون اور الضاحيہ کے مابین احتجاجات اور سیاسی پیغامات

پیر, 8 March, 2021 - 11:00
گزشتہ روز بیروت پورٹ دھماکے میں جاں بحق ہونے والے پیرامیڈک سحر فارس کی سہیلیوں کو دیکھا جا سکتا ہے (ای پی اے)
بیروت کے جنوبی نواحی علاقوں میں طویل عرصے سے جاری نقل وحرکت کے بعد کل کئي لبنانی علاقوں میں دوبارہ عوامی مظاہرے ہوئے ہیں اور ان کی طرف سے بعبدا (صدارتی محل کا صدر مقام) جانے کے لئے بھی دعوت دئے گئے ہیں اور اسے آزاد محب وطن تحریک نے امید تحریک کے صدر جمہوریہ کے نام ایک سیاسی پیغام سمجھا ہے جس نے اور اسی طرح حزب اللہ نے ہونے والے واقعات سے اپنے تعلقات کا انکار کیا ہے۔

آزاد محب وطن تحریک کے ذرائع نے "الشرق الاوسط" کو بتایا ہے کہ شمال سے بقاعاور بیروت تک پھیلا ہوا ایک آرکسٹرا موجود ہے جس میں صدر مائکل عون پر حملہ کرنے اور ان کی توہین کرنے کے لئے کچھ جماعتیں اکٹھی کی گئیں ہیں جبکہ ایسا لگتا ہے کہ ایک واضح پاس ورڈ ہے جو حملہ کرنے کے لئے دیا گیا ہے۔


مضافاتی علاقوں کی نقل وحرکت کے بارے میں ذرائع نے وضاحت کی ہے کہ اس علاقے میں یہ معلوم ہے کہ کون سے پارٹیاں متحرک ہیں اور یہ دو ٹیمیں ہیں جن میں سے ایک امید تحریک ہے جس کی سربراہی پارلیمنٹ کے اسپیکر نبیہ بری اور حزب اللہ کررہے ہیں اور دوسری پارٹی وہ ہے جو نہ یہ کرتی ہے اور وہ کرتی ہے جبکہ موٹرسائیکلوں کے انداز سے یہ معلوم ہوتا ہے کہ وہ کون لوگ اس کے مالکان ہیں؛ لہذا ایسا لگتا ہے کہ صدر عون کے موقف اور خاص طور پر مجرمانہ جانچ اور اس سے متعلق ان کے نقطہ نظر سے پریشان افراد کی جانب سے بعبدا کو کوئی پیغام ملا ہے لیکن ان سب سے کچھ تناؤ اور سڑکوں کو بلاک کرنے سے زیادہ کچھ نہیں بدلے گا۔(۔۔۔)


پیر 25 رجب 1442 ہجرى – 08 مارچ 2021ء شماره نمبر [15441]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا